Library Sindh Study FG Study Punjab Study
PakStudy :Yours Study Matters

Board of Intermediate & Secondary Education Peshawar Result of SSC (9th & 10th),

Offline iram

  • *****
  • 3841
  • +16/-3
  • Gender: Female
Board of Intermediate & Secondary Education Peshawar Result of SSC (9th & 10th), 2009

Result of SSC (9th & 10th), 2009 will be announced on

16/06/2009 at 08:00 a.m.

مندرجہ ذیل لنک پر جا کر اپنا رول نمبر درج کریں آپ کو پشاور میٹرک کا رزلٹ فوری مل جائے گا۔  یہ
پشاور بورڈ کی مین ویب سائٹ کا ایڈریس ہے ۔
http://www.bisep.com.pk/

اگر کوئی مشکل ہو تو اپنا رول نمبر یہاں پوسٹ کریں۔ ہم فوری آپ کو رزلٹ بذریعہ ای میل ارسال کردیں گے ۔
شکریہ
[/b]

Offline iram

  • *****
  • 3841
  • +16/-3
  • Gender: Female
BISE Peshawar SSC results 2009
« Reply #1 on: June 16, 2009, 08:31:04 AM »
BISE Peshawar SSC results

Tuesday, June 16, 2009 :PESHAWAR: The boards of Intermediate and Secondary Education Peshawar Monday announced results of the secondary school certificate (SSC) examination.

A total of 46,237 students appeared in the Peshawar BISE SSC exams of whom 37,101 qualified it with a pass percentage of 80.24. The result was declared at an award giving ceremony for the position holders, who, besides commendation certificates, were also awarded a cash prize of Rs15,000, 10,000 and 5,000 for the first, second and third positions, respectively.

Nayab Karim Khan topped the Science Group by obtaining 963 out of 1,100 marks and was awarded Rs15,000. Farhatullah Khan followed her with 960 and Esha Khan Khattak with 957. Naureen Saeed topped the Humanities Group by securing 861 marks followed by Zuhra Batool with 860 marks. Sidra Khan stood third. The three were given away the prizes.

Speaking on the occasion, Nasir Ali, controller examination said: “We are proud of the students that this year result of SSC examination has shown a great improvement compared to the previous year”.

Offline iram

  • *****
  • 3841
  • +16/-3
  • Gender: Female
Peshawar Board Result of SSC (9th & 10th),Roll No.420
« Reply #2 on: June 16, 2009, 05:22:15 PM »
Search for Roll No.420

Roll No    Name    Marks   Grade   Failed Subjects/Remarks
420    HAFIZA SUMMIYAH JAFFAR    341
   
   
 

Offline emad

  • *
  • 1
  • +0/-0
sallam,
         I don't know what is going on peshawar board staff. website ki halat roz ba roz kharab hoti ja rahi hai ab ek insan jo abroad hai r apni family member ka result check karna chahta hai wo kiya kare ga? website ki halat aisi ho gayi hai k insan is se koi info nahi le sakta ab peshawar board ko sirf paiso se matlab hai admission fees roz ba roz ziyada ki ja rahi hai r badle main ghatya saholat... har koi jan churane ki kar raha hai jab k staff ko chahiye jitne wo paise le rahe hain utna kaam b kar k dikhaye r apni website ko pehli ki tarha banaya jaye jis main position holders, search result by name each and everything specify ki jaye
                                                                                                                     shukriyaaaaaaa!

Offline iram

  • *****
  • 3841
  • +16/-3
  • Gender: Female
تحفظ حقوق صارف بل
« Reply #4 on: June 18, 2009, 12:30:51 PM »

آپ کی شکایت سو فیصد درست ہیں۔ اب تک مجھے جو معلومات پشاور بورڈ کے بارے میں معلوم ہوئی ہیں۔ وہ یہ
پشاور بورڈ کی ویب سائٹ کے لئے کوئی باقاعدہ عملہ موجود نہیں۔ کمپوٹر سکشین والوں پر رزلٹ کی تیاری کا بہت زیادہ کام ہے ۔ اس لئے وہ ویب سائٹ کی دیکھ بھال نہیں کرسکتے ۔

رزلٹ والے دن صبح یا شام کو ایک آدمی کو بذریعہ بس لاہور روانہ کیا جاتا ہے ۔ جو کہ لاہور میں موجود ویب ھوسٹ کپمنی کے دفتر میں رزلٹ کا ڈیٹ جو کہ سی ڈی پر مشتمل ہوتا ہے ۔ ان کے حوالے کرتا ہے ۔ وہ کمپنی الگ دن یا جب وہ فارغ ہوتی ہے ۔ اس کو اپ لوڈ کرتی ہے ۔ اور اس طرح یہ رزلٹ آپ لوگوں تک پہنچاتا ہے  ۔
دیگر بورڈ میں ویب سائٹ کی تیاری ، مرمت،اور دیکھ بھال کے لیے باقاعدہ سٹاف موجود ہوتا ہے ۔ جو کہ پشاور سمیت صوبہ سرحد کے اکثر تعلیمی بورڈ کے پاس نہیں۔ صرف ٹیکنکل بورڈ سرحد کے پاس اس طرح کا اتنظام موجود ہے ۔ اس لئے ان کی ویب سائٹ کام کرتی ہے ۔

پنجاب کے لوگوں نے حکومت سے پرامن لڑ کر اپنے حقوق حاصل کیا ہے ۔ اور 2005 میں پاکستان میں پہلی مرتبہ صرف صوبہ پنجاب کی اسمبلی نے ’’تحفظ حقوق صارف بل‘‘ کو منظور کیا  ۔ اب پنجاب کے اندر اگر اس طرح کی کوئی بدانتظامی ہوں تو کوئی بھی طالب علم بغیر وکیل کے بورڈ پر ہرجانہ کا کیس کرسکتا ہے ۔ اور ایک یا دو تاریخ کے اندر (ایک سے دو ماہ) کے اندر نہ صرف اس کا مسئلہ حل کیا جاتا ہے ۔ بلکہ متعلقہ فرد یا ادارے کو جرمانہ بھی کیا جاتا ہے ۔ جو کہ سستی روٹی کی طرح ہو رہا ہے ۔

تاکہ صوبہ سرحد کے عوام ابھی سستے انصاف سے محروم ہیں۔
آپ کو میڈیا ، اخبارات میں اس طرح کے مراسلہ (ایڈیٹر کی ڈاک) میں ارسال کرنے چاہئے۔ تاکہ آپ کی آواز سے بورڈ کا رویہ درست ہو۔ پشاور یا سرحد کے مسئلہ کو کسی اور یا کوئی ولی، فرشتے نے نہیں خود پشاور یا سرحد کے عوام خصوصا نوجوانوں نے درست کرنا ہے ۔ اگر آپ میں ہمت ہے تو ابھی بورڈ کے چیرمین ،صوبائی وزیر تعلیم کو خط تحریر کریں ۔ اور اس مسئلہ کو حل کرنے پر زور دیں۔ انشااللہ صورت حال بدل جائے گی ۔ شرط ہمت کی ہے ۔
والسلام