Library MCQS Sindh Study Punjab Study
PakStudy :Yours Study Matters

جامعہ کراچی کے ٹیسٹ میں سرکاری بورڈز کے معیار کی قلعی کھل گئی

Offline AKBAR

  • *****
  • 4901
  • +1/-1
  • Gender: Male
    • pak study

جامعہ کراچی کے ٹیسٹ میں سرکاری بورڈز کے معیار کی قلعی کھل گئی
جامعہ کراچی کے سال 2021-22ء کے بیچلرز کے داخلہ ٹیسٹ میں ملک بھر کے سرکاری بورڈز کے معیار تعلیم کی قلعی کھول دی ہے، صرف کیمبرج اور آغا خان بورڈ ہی متاثر کن کارکردگی دکھا سکے ہیں۔

 تفصیلات کے مطابق جامعہ میں داخلہ کے خواہشمند انٹر میں 90؍ فیصد یا اس سے زائد نمبر لانے والے امیدوار بھی بڑی تعداد میں جامعہ کراچی کے داخلہ ٹیسٹ میں ناکام ہوگئے ہیں ٹیسٹ میں کامیابی کے لئے 50؍ فیصد نمبر لانا ضروری تھے۔

جامعہ کراچی کے وائس چانسلر ڈاکٹر خالد محمود عراقی کی جانب سے فراہم کردہ اعداد و شمار کے مطابق سب سے بہت کارکردگی کیمبرج یونیورسٹی کی رہی جہاں اس کے امیدواروں کا ٹیسٹ میں کامیابی کا تناسب 69.2؍ فیصد رہا۔ کیمبرج کے 123؍ امیدواروں میں سے 86؍ امیدوار کامیاب ہوئے۔

آغا خان بورڈ کے 182؍ امیدواروں میں سے 82؍ امیدوار کامیاب ہوئے اور وہ 48.32؍کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہا۔

فیڈرل بورڈ کے 455؍ امیدواروں میں سے 112؍ امیدوار کامیاب ہوئے اور ٹیسٹ کا نتیجہ 24.62؍ رہا۔ ضیاء الدین امتحانی بورڈ کی کارکردگی بھی مایوس کن رہی اس کے 284؍ امیدواروں نے ٹیسٹ دیا اور صرف16؍ امیدوار ٹیسٹ پاس کرسکے اور نتیجہ 5.63؍ فیصد رہا ۔

 انٹر بورڈ کراچی کی کارکردگی بھی غیر تسلی بخش رہی انٹر بورڈ کراچی کے 11902؍ امیدواروں میں سے 2839 ؍ کامیاب ہوئے اور نتیجہ 23.85؍ فیصد رہا۔ حیدرآباد بورڈ کا تناسب 17.30؍ فیصد، میرپورخاص کا 14.96؍ فیصد، سکھر بورڈ کا 5.72؍ فیصد، لاڑکانہ بورڈ کا 5.47 ؍ فیصد، گلگت بلتستان کا 5.71؍ فیصد، کوئٹہ بورڈ کا 5.02؍ فیصد رہا۔

پشاور بورڈ کا 5.02؍ فیصد رہا جبکہ لاہور بورڈ کا کامیابی کا تناسب 15.00؍ فیصد رہا۔ ٹیسٹ میں تربت، ژوب، مالا کنڈ، ڈی آئی خان اور بنوں بورڈز کا ایک امیدوار بھی کامیاب نہیں ہوسکا جبکہ ایبٹ آباد بورڈ کے تین، گلگت بلتستان کے دو، گجرانوالہ کے دو، مردان کا ایک، میرپور کے تین، پشاور کے دو، ساہیوال کے دو، سرگودھا کے تین اور سوات بورڈ کے تین امیدوار پاس ہوسکے۔